Home / Health / وائی فائی کی لہریں انسانوں کیلئے جان لیوا بھی ہوسکتی ہیں

وائی فائی کی لہریں انسانوں کیلئے جان لیوا بھی ہوسکتی ہیں

وائرلیس انٹرنیٹ سے براہ راست اٹھنے والی لہریں انسانی دماغ کو متاثر کرتی ہیں ، سر میں درد اور کانوں میں تکلیف کا باعث بنتی ہیں :ماہرین

انٹرنیٹ زیادہ استعمال کرنے والے ہوجائیں ہوشیار ، ماہرین کا کہنا ہے کہ وائی فائی کی لہریں انسان کے لیے جان لیوا بھی ہوسکتی ہیں ۔ انٹرنیٹ ماہرین نے وائی فائی لہروں کے انسانی زندگی پر پڑنے والے مضر اثرات پر خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ وائی فائی کا استعمال انسان کے لیے جان لیوا ہوسکتا ہے ۔ تحقیق میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ وائی فائی کی شعاعیں انسانی اور نباتاتی نشو و نما پر اثرانداز ہونے کے ساتھ ساتھ انسانی جان لے سکتی ہے ۔ تحقیق کے مطابق وائرلیس انٹرنیٹ سے براہ راست اٹھنے والی لہریں انسانی دماغ پر اثر انداز ہوتی ہیں ۔ یہ لہریں سر میں درد اور کانوں میں بھی تکلیف کا باعث بنتی ہے جس کی وجہ سے یہ انسانی جان کے لیے خطرہ بن جاتا ہے ۔ کیمبرج یونیورسٹی کی ایک دوسری تحقیق میں کہا گیا ہے کہ وائرلیس انٹرنیٹ کی لہریں حاملہ خواتین کے لیے بھی نقصان دہ ہوسکتی ہیں ۔

About ZK-admin

Check Also

Loose Fat At Home

Loose Fat At Home

Loose Fat At Home During the course of exercising to lose weight, one body part …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *