Home / News / کمپیوٹر میں موجود پنکھے سے ڈیٹا چوری کرنے کا کامیاب تجربہ

کمپیوٹر میں موجود پنکھے سے ڈیٹا چوری کرنے کا کامیاب تجربہ

کمپیوٹر میں موجود پنکھے سے ڈیٹا چوری کرنے کا کامیاب تجربہ

آج کل ٹیکنالوجی میں ایسی ایسی جدتیں آ رہی ہیں کہ سن کے یقین نہیں آتا- اسرائیل کے سائنس دانوں نے کمپیوٹر سے ڈیٹا چوری کرنے کاایک عجیب طریقہ ایجاد کیا ہے- ان کے مطابق کمپیوٹر میں نصب پنکھے کو ڈیٹا چوری کرنے کے لیے کامیابی سے استعمال کیا جا سکتا ہے- کمپیوٹر میں موجود یہ وہی پنکھا ہے جو کہ محض پروسیسر کی ھیٹ کو ایگزاسٹ کرنے کے لیے لگایا جا تا ہے- کوئی بھی کمپیوٹر جو انٹرنیٹ سے منسلک ہو اس سے ڈیٹا تو ہیکر آسانی سے چرا سکتے ہیں – مگر ایسے کمپیوٹر جن میں حساس معلومات ہوتی ہیں ان کو اکثر انٹرنیٹ سے منسلک نہیں کیا جاتا تا کہ ڈیٹا چوری ہونے کا کوئی بھی خطرہ باقی نہ رہے

جس کمپیوٹر سے ڈیٹا چوری کرنا ہوتا ہے اس میں ہیکر پہلے ایک مال وئیر سے اس کمپیوٹر کو متاثر کرتا ہے- اس کے بعد پروسیسر کا پنکھا آواز کی صورت میں ڈیٹا بھیجنا شروع کرتا ہے- اس طریقہ میں ہیکر کو قریب ترین سمارٹ فون بھی ہیک کرنا پڑتا ہے- یہ سمارٹ فون کمپیوٹر سے زیادہ سے زیادہ آٹھ میٹر کی دوری پر ہونا چاہئیے- متاثرہ کمپیوٹر کے پروسیسر کا پنکھا آواز کی صورت میں ڈیٹا سمارٹ فون کو بھیجتا ہے اس کے بعد ہیکر اس ڈیٹا کو ڈی کوڈ کرتا ہے اور آسانی سے اپنے مقاصد کے لیے استعمال کرتا ہے

About ZK-admin

Check Also

Plane Crash In Pakistan

پی آئی اے کا مسافر طیارہ گرکر تباہ

پی آئی اے کا مسافر طیارہ گرکر تباہ چترال سے اسلام آباد جانے والا پی …

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *